امتحان میں کم مارکس آنا کوئی غلط بات نہیں ہے۔ ایک خوبصورت واقعہ

آج کل کی تیز رفتار اور مشینی دور میں ہر والدین کی خواہش ہوتی ہے کہ ان کے بچے امتحان میں زیادہ سے زیادہ مارکس حاصل کریں، زیادہ مارکس اور پوزیشن کے چکر میں بچوں پر ان کی قابلیت سے زیادہ بوجھ ڈال دیا جاتا ہے۔

صبح شام پڑھائی، ٹیوشنز اور اکیڈمی کے چکر میں بچوں کو پریشرائز کر کے دھمکی دی جاتی ہے کہ اگر اس امتحان میں تم نے زیادہ مارکس نہ لائے تو تم زندگی میں کبھی کچھ نہیں بن سکو گے، اور ہم (والدین) لوگوں کو کیا منہ دکھائیں گے۔

ایسے والدین جو سمجھتے ہیں کہ امتحانان میں زیادہ نمبرات حاصل کرنا ہی سب کچھ ہوتا ہے، ان کے لئے آج ہم ایک سبق آموز واقعہ لے کر حاضر ہوئے ہیں۔ جو آپ کی سوچ کو تبدیل کر کے رکھ دے گا۔

سنگاپور میں امتحانات سے قبل ایک اسکول کے پرنسپل نے بچوں کے والدین کو خط بھیجا جس کا مضمون کچھ یوں تھا۔

محترم والدین!
آپ کے بچوں کے امتحانات جلد ہی شروع ہونے والے ہیں۔میں جانتا ہوں آپ سب لوگ اس چیز کو لے کر بہت بے چین ہیں کہ آپ کا بیٹا امتحانات میں اچھی کارکردگی دکھائے۔

لیکن یاد رکھیں یہ بچے جو امتحانات دینے لگے ہیں ان میں (مستقبل کے) آرٹسٹ بھی بیٹھے ہیں جنھیں ریاضی سمجھنے کی ضرورت نہیں ہے۔اس میں بڑی بڑی کمپنیوں کے ترجمان بھی ہوں گے جنھیں انگلش ادب اور ہسٹری سمجھنے کی ضرورت نہیں۔

یہ بھی پڑھیے : خوف کا علاج – ایک سبق آموز کہانی

ان بچوں میں (مستقبل کے) موسیقار بھی بیٹھے ہوں گے جن کے لیے کیمسٹری کے کم مارکس کوئی معنی نہیں رکھتے ان سے ان کے مستقبل پر کوئی اثر نہیں پڑنے والا۔ ان بچوں میں ایتھلیٹس بھی ہو سکتے ہیں جن کے فزکس کے مارکس سے زیادہ ان کی فٹنس اہم ہے۔

یہ بھی پڑھیے : غرور کا سر نیچا – ایک سبق آموز کہانی

لہذا اگر آپ کا بچہ زیادہ مارکس لاتا ہے تو بہت خوب لیکن اگر وہ زیادہ مارکس نہیں لا سکا تو خدارا اس کی خود اعتمادی اور اس کی عظمت اس بچے سے نہ چھین لیجیے گا۔

اگر وہ اچھے مارکس نہ لا سکے تو انھیں حوصلہ دیجیے گا کہ کوئی بات نہیں یہ ایک چھوٹا سا امتحان ہی تھا وہ زندگی میں اس سے بھی کچھ بڑا کرنے کے لیے بنائے گئے ہیں۔

اگر وہ کم مارکس لاتے ہیں تو انھیں بتا دیں کہ آپ پھر بھی ان سے پیار کرتے ہیں اور آپ انھیں ان کم مارکس کی وجہ سے جج نہیں کریں گے۔

خدارا! ایسا ہی کیجیے گا اور جب آپ ایسا کریں گے پھر دیکھیے گا آپ کا بچہ دنیا بھی فتح کر لے گا۔۔۔ایک امتحان اور کم مارکس آپ کے بچے سے اس کے خواب اور اس کا ٹیلنٹ نہیں چھین سکتا۔

اور پلیز! ایسا مت سوچیئے گا کہ اس دنیا میں صرف ڈاکٹر اور انجینئرز ہی خوش رہتے ہیں۔

آپ کا مخلص
پرنسپل

اگر آپ کو یہ واقعہ اچھا لگا ہے تو آپ اسے سوشل میڈیا پر شیئر کر سکتے ہیں۔ تاکہ آپ کے دوست احباب کی بھی بہتر طور پر راہنمائی ہو سکے۔

اپنی رائے کا اظہار کریں